دنیا میں تیرے جیسا کوئی دوسرا نہیں ہے

Aside

My darling Grandaughter has finished school today with flying colors! She has made the family proud with Straight As Ma sha Allah… the best time to re blog the poem I wrote for her when she was a child!

Time flies!Its been nearly three years since I posted this blog with my poem.  My darling has made the family proud again! Alhumdulillah for the happy moments.

دنیا میں تیرے جیسا 
کوئی دوسرا نہیں ہے
مرے دل کو ہیں لبھاتی
ہر دم تری ادائیں
 
  ہنستی ہے جب بھی تو تو
  لگتا ہے مجھ کو ایسا
  جھونکے ہوا کے جیسے 
  کلیوں کو گدگائیں
 
  رونا بھی تیرا مجھ کو
  لگتا ہے اتنا پیارا
  شبنم کے قطرے جیسے 
  پھولوں کا منھ دھلائیں
 
ہے نیند میں بھی تیری
ایسی ادا نرالی
جنت کی حوریں جیسے 
لوری تجھے سنائیں
 
آنکھوں میں تیری گڑیا
ہے ایسی اک چمک سی
سورج کی کرنیں جیسے
پانی پہ جھلملائیں
 
ہو ماں کا سایہ سر پہ
پاپا رہیں سلامت
نانی تری خدا سے
ہر دم کرے دعائیں
 
پھولوں کے پالنے میں
گزرے یوں تیرا بچپن
پریوں کی رانی آ کر
جھولا تجھے جھلائیں
 
تو خوش رہے ہمیشہ
دکھ جھیلنے کو میں ہوں
لے لوں اے سعدیہ میں
ساری تری بلائیں