MAA KI DUA! (For my readers who can not read Urdu)

Maa ke daaman mein hoti hai wus’at bohat

Daal do meri jholi mein jo tum ko hain ghum

Chun loon palkon se raste mein kaante hain jo

Paas aane na doon mein tumhare ye ghum

 

Ji rahi hun mein sirf tumhare lye

Tum pareshan ho ye mujh ko gawara nahin

Tour laon mein taare jo ho bas mein mere

Kya karoon mere bachon ye mumkin nahin

 

Meri Jan ye is dunya ka dastoor hai

Jo bhee darta hai aur us ko daraati hai ye

Hans ke har dukh ka saamna tum karo

Ke jo bhee rota hai aur usko rulaati hai ye

 

Mein ne maana ke waqt ye hai mushkil bohat

Rakho himmat jawaan, aage barhte raho

Mushkilein saari aasaan ho jaayeingi

Tum duaaen meri sath le ke chalo

 

Naao aaj beech toofan ghir gayi hai tou kya

Na khuda hai Khuda mera rakho yaqeen

Ik din sahil pe pohncheigi kashti zurur

Apni maa ki duaaon pe rakho yaqeen

 

Daur ye sakht jo hai ye guzar jaayeiga

Chumeigi eik din manzil tumhare qadam

Ke hai dua maa ki jis ke bhee hamqadam

Uska Haami hai Allah, khud Us ki qasam!!

 

Advertisements

ماں کی دعا


ماں کے دامن میں ہوتی ہے وسعت بہت 
ڈال دو میری جھولی میں جو تم کو ہیں غم
چن لوں پلکوں سے رستے میں کانٹے ہیں جو
پاس آنے نہ دوں میں تمہارے یہ غم


جی رہی ہوں میں صرف تمہارے لئے
تم پریشان ہو، یہ مجھ کو گوارہ نہیں
توڑ لائوں میں تارے گر ہو بس میں مرے
کیا کروں میرے بچوں یہ ممکن نہیں


میری جان یہ اس دنیا کا دستور ہے
جو بھی ڈرتا ہے اور اس کو ڈراتی ے یہ
ہنس کے ہر دکھ کا سامنا تم کرو
کہ جو بھی روتا ہے اور اس کو رلاتی ہے یہ


میں نے مانا کہ وقت یہ ہے مشکل بہت
رکھو ہمت جواں، آگے بڑھتے رہو
مشکلیں ساری آساں ہو جائینگی
تم دعائیں مری ساتھ لے کے چلو


نائو آج بیچ طوفاں گھر گئی ہے تو کیا
ناخدا ہے خدا میرا رکھو یقین
اک دن ساحل پہ پہچیگی کشتی ضرور
اپنی ماں کی دعائوں پہ رکھو یقین


دور یہ سخت جو ہے، یہ گزر جائیگا
چومیگی اک دن منزل تمہارے قدم
کہ ہے دعا ماں کی جس کے بھی ہم قدم
اس کا حامی ہے اللہ، خود اس کی قسم